February 27th, 2021 (1442رجب15)

کشمیری عوام بھارتی جبر و تشدد سے آزادی کی جنگ لڑ رہے ہیں - آٹھ لاکھ انڈین فوج کشمیریوں کے جذبہ جہاد اور شوق شہادت کو سرد نہیں کر سکتیِ-دردانہ صدیقی 

حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان کی سیکرٹری جنرل دردانہ صدیقی نے کہا ہے کہ ظالم بھارتی افواج نےگذشتہ  نصف صدی سے کشمیر پر فوج کشی کے ذریعے ظالمانہ تسلط قائم کر رکھا ہے - جبر و استداد سے آزادی کی اس جنگ میں ایک لاکھ چالیس ہزار سے زائد کشمیری نوجوان اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر چکے ہیں - ستر ہزار کشمیری عقوبت خانوں میں قید و بند کی صعوبتیں برداشت کر رہے ہیں - یہ بات انہوں نے 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے اپنے ایک خصوصی بیان میں کہی             
انہوں نے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح رحمۃ اللہ علیہ نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ اور وجود پاکستان  کے لئے ناگزیر قرار دیا مگر بھارت نے گزشتہ 73 سال سے کشمیر پرغاصبانہ تسلط قائم کر رکھا ہے .تقسیم ہند ک وقت اصولا کشمیر کا پاکستان سے الحاق ہونا چاہیے تھا مگر بھارت نے ریاست جموں کشمیر پر فوج کشی کر کے ناجائز تسلط کے ذریعے کشمیری مسلمانوں کو حق خود ارادیت سے محروم کر دیا -  
انہوں نے کہا کہ بھارت  کشمیر میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کے لیے ظالمانہ ہتھکنڈے استعمال کررہا ہے- دفعہc -370 کے تحت کشمیر کی خود مختار حثیت ختم کر کے ایک سال سے زائد عرصہ پر محیط بد ترین لاک ڈاؤن کے ذریعے کشمیری مسلمانوں کی مکمل نسل کشی کی منصوبہ بندی کے ساتھ بھارت نے 10لاکھ ریٹائرڈ ہندو فوجیوں کو مستقل طورپر کشمیر میں بسانے کامنصوبہ بھی بنایا جس کے تحت اب تک تین لاکھ ہندو فوجیوں کو کشمیر کے ڈومیسائل جاری کیے جاچکے ہیں- انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ بھارت کرونا وائرس جیسی جان لیوا وبا  کو بھی کشمیریوں کے خلاف جنگی ہتھیار کے طور پر استعمال کرچکا ہے.     مسلم آبادی کے تناسب کو کم کرنے کے لیے سوا سال سے جاری لاک ڈاؤن اور دوسرے ظالمانہ ہتھکنڈوں کے ذریعےبھارت کشمیریوں کی نسل کشی کررہاہے-
دردانہ صدیقی نے کہا کہ بھارتی فوج کی طرف سے مظلوم کشمیریوں پر ڈھائے جانے  والے مظالم پر اوآئ سی اور ایمنسٹی انٹرنیشنل کی آنکھیں بند ہیں اور ان کے کان کشمیری خواتین کی آہیں اور چیخیں سننے سے قاصر ہیں -مسلہ کشمیر پر حکومت پاکستان کی مجرمانہ خاموشی لمحہ فکریہ  ہے مگر پاکستانی عوام کے دل اہل کشمیر کے ساتھ دھڑکتے ہیں -                           حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان کے ارکان وکارکنان کشمیری مسلمانوں کی حالت زار اور بدترین لاک ڈاؤن پر شدید مضطرب اور رنجیدہ ہیں 

 دردانہ صدیقی نے حکومت وقت , اقوام عالم اور عالمی عدالت انصاف سے مطالبہ کیا کہ مقبوضہ کشمیر میں نصف صدی سے جاری ظلم وتشدد کا سلسلہ فوری طور پر بند کروایا جائے -کشمیر یوں کو حق خود ارادیت دلوانے کے لئے عالمی سطح پرآواز اٹھائ جائے
انہوں نے اقوام عالم سے اپیل کی کہ کشمیر میں جاری بدترین لاک ڈاؤن , ریاستی دہشت گردی ختم کروانے میں  متوقع کردار ادا کریں