January 26th, 2021 (1442جمادى الثانية12)

آکسیجن سلنڈر کی قیمتوں مسلسل اضافہ ,جماعت اسلامی کی خاتون رکن صوبائی اسمبلی حمیراخاتون نے توجہ دلاو نوٹس اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرادی۔

عالمی وباءCOVID19 کی دوسری لہر میں تیزی کے بعدپشاور سمیت صوبہ بھر میں آکسیجن سلنڈرکی قیمتوں میں مسلسل اضافہ سے عوام بالخصوص گھروں پر زیر علاج کورونا متاثرہ مریضوں کو درپیش مشکلات پر جماعت اسلامی کی خاتون رکن صوبائی اسمبلی حمیراخاتون نے صوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ میں توجہ دلاونوٹس جمع کراتے ھوئے موقف اپنایا ھے کہ ملک بھر کی طرح صوبہ خیبر پختونخوا میں بھی کورونا وباء کی دوسری لہر میں تیزی آئی ہے جس کے تحت بڑی تعداد میں متاثرہ مریض گھروں پر آئسولیشن اختیار کئے ہوئے ہیں۔سانس کی تکلیف کے باعث ڈاکٹروں کی تجویز پران مریضوں کوسلنڈز کے زریعے آکسیجن فراہم کی جاتی ہے جس کی بنا پر آکسیجن سلنڈر کی مانگ بڑھ گئی ہے اور مارکیٹ میں آکسیجن سلنڈر کی قیمت میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے انہوں نے کہا ھے کہ کورونا وباء سے قبل جس سلنڈرکی بھرائی ڈھائی سے تین سو روپے میں ہوتی تھی کورونا کی پہلی لہر میں وہ 800روپے تک پہنچ گئی تھی جبکہ حالیہ لہر میں اس سلنڈر کی قیمت 1800تک پہنچ چکی ہے اس طرح تین چار ہزار میں ملنے والا سلنڈر اب 12ہزار سے بھی مہنگا فروحت ہو رہا ہے۔یہ ایک انتہائی اہم اور فوری عوامی نوعیت کا معاملہ ہے لہذا وزیر صحت آکسیجن سلنڈر کی قیمتوں کے تعین سے متعلق حکومتی پالیسی اور تاجروں کی جانب سے آکسیجن سلنڈر کی قیمتوں میں آئے روز اضافے سے متعلق اصل حقائق سےایوان کو آگاہ کریں تاکہ گھروں پر زیر علاج کورونا مریضوں اور عوام میں پائی جانی والی تشویش اور اضطراب کا ازالہ ہوسکے