January 18th, 2020 (1441جمادى الأولى22)

خواتین دین کی دعوت اور جماعت اسلامی کے پیغام کو گھرگھرپہنچائیں اور رابطہ عوام مہم کا آغاز کریں‘خواتین کے اجتماع ارکان سے حافظ نعیم الرحمن کاخطاب

امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی کا مقصد صرف الیکشن میں کامیابی نہیں بلکہ اقامت دین کی جدو جہد ہے،دین کے غلبے اور ملک میں اسلامی نظام کے نفاذ کے لیے ہماری جدوجہد جاری رہے گی، کسی بھی تحریک اور جدوجہدمیں خواتین کا کردار انتہائی اہم ہو تا ہے، جماعت اسلامی سے وابستہ خواتین نے مختلف مہمات میں ہمیشہ بھرپور حصہ لیا ہے،خواتین دین کی دعوت اور جماعت اسلامی کے پیغام کو گھر گھر پہنچائیں اور رابطہ عوام مہم کا آغاز کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نور حق میں جماعت اسلامی حلقہ خواتین کراچی کے اجتماع ارکان سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجتماع سے جماعت اسلامی حلقہ خواتین کراچی کی ناظمہ اسماء سفیر نے بھی خطاب کیا۔اجتماع ارکان میں بجلی گیس کی قیمتوں میں اضافے اور بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف قرارداد منظور کی گئی اور اس عزم کا اظہار کیا گیا کہ کشمیر ی عوام کی حمائت اور جدوجہد آزادی کی پشتیبانی جاری رکھی جائے گی۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ جماعت اسلامی نے ملکی تعمیر وترقی میں اہم کردار ادا کیا ہے، ہم ووٹ کی طاقت کے ذریعے پاکستان میں جاری ظلم کے نظام کو تبدیل کرنا چاہتے ہیں،پاکستان میں حقیقی تبدیلی جماعت اسلامی ہی لاسکتی ہے، جماعت اسلامی معاشرتی اور حکومتی سطح پر حقیقی تبدیلی کیلئے آئینی،قانونی اور سیاسی و جمہوری جدوجہد پر یقین رکھتی ہے، ان ہی مقاصد اور اصولوں کے تحت مولانا مودودیؓ نے جماعت اسلامی کی بنیاد رکھی تھی، ہمارے پیش نظر رضائے الٰہی کا حصول ہے،کامیابی اور ناکامی کا معیار دوسری جماعتوں اور گروہوں سے مختلف ہے،نتائج خواہ کچھ بھی ہوں،ہمیں اقامت دین کی جدوجہد جاری رکھنی ہے،ہمیں اپنے اخلاق و کردار سے دعوت کے میدان میں لوگوں کے دل جیتنے ہیں، اپنے رویے سے لوگوں کو متاثر کرنا ہے،اپنے ساتھ ملانا ہے اور اس جدوجہد اور تحریک کا حصہ بنانا ہے، ہمیں جماعت کے کام کو بہتر بنانے اور دعوت کے کام کو بڑھانے کیلئے زیادہ سے زیادہ وقت دینا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ عوام کی خدمت اور مسائل کے حل کے لیے ہماری جدو جہد حکومت اور اقتدار سے مشروط نہیں ہے، جماعت اسلامی نے کے الیکٹرک، نادرا، واٹر بورڈ، گیس بحران سمیت بلدیاتی اداروں کی نا اہلی اور صوبائی حکومت کی ناقص کارکردگی کیخلاف عوام کی ترجمانی کی ہے اور عوام کو ریلیف دلانے کی ہر ممکن کوشش کی ہے۔ اسماسفیر نے کہا کہ خواتین ارکان بڑی تعداد میں رابطے میں رہیں،گھروں میں جا کر ان کے مسائل سے آگاہی حاصل کریں اور دعوت کے ذریعے زندگی کا شعور دیں اوربلدیاتی الیکشن میں خواتین کو قیادت کی تبدیلی کیلئے تیار کریں۔